اڑ گئی یوں وفا زمانے سے

اڑ گئی یوں وفا زمانے سے کبھی گویا کسی میں تھی ہی نہیں داغ دہلوی

ادامه مطلب

یا رب ہے بخش دینا بندے کو کام تیرا

یا رب ہے بخش دینا بندے کو کام تیرا محروم رہ نہ جائے کل یہ غلام تیرا جب تک ہے دل بغل میں ہر دم…

ادامه مطلب

معشوق کا تو جرم ہو عاشق خراب ہو

معشوق کا تو جرم ہو عاشق خراب ہو کوئی کرے گناہ کسی پر عذاب ہو داغ دہلوی

ادامه مطلب

کیا کہا پھر تو کہو ہم نہیں سنتے تیری

کیا کہا پھر تو کہو ہم نہیں سنتے تیری نہیں سنتے تو ہم ایسوں کو سناتے بھی نہیں داغ دہلوی

ادامه مطلب

فلک دیتا ہے جن کو عیش ان کو غم بھی ہوتے ہیں

فلک دیتا ہے جن کو عیش ان کو غم بھی ہوتے ہیں جہاں بجتے ہیں نقارے وہیں ماتم بھی ہوتے ہیں گلے شکوے کہاں تک…

ادامه مطلب

عذر آنے میں بھی ہے اور بلاتے بھی نہیں

عذر آنے میں بھی ہے اور بلاتے بھی نہیں باعث ترک ملاقات بتاتے بھی نہیں منتظر ہیں دم رخصت کہ یہ مر جائے تو جائیں…

ادامه مطلب

دیکھو جو مسکراکے تم آغوش نقش پا

دیکھو جو مسکراکے تم آغوش نقش پا گستاخیوں کرے لب خاموش نقش پا پائی مرے سراغ سے دشمن نے راہ دوست اے بیخودی مجھے نہ…

ادامه مطلب

خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا

خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا جھوٹی قسم سے آپ کا ایمان تو گیا دل لے کے مفت کہتے ہیں کچھ کام…

ادامه مطلب

تو ہے مشہور دل آزار یہ کیا

تو ہے مشہور دل آزار یہ کیا تجھ پر آتا ہے مجھے پیار یہ کیا جانتا ہوں کہ میری جان ہے تو اور میں جان…

ادامه مطلب

بت کو بت اور خدا کو جو خدا کہتے ہیں

بت کو بت اور خدا کو جو خدا کہتے ہیں ہم بھی دیکھیں تو اسے دیکھ کے کیا کہتے ہیں ہم تصور میں بھی جو…

ادامه مطلب

آج راہی جہاں سے داغ ہوا

آج راہی جہاں سے داغ ہوا خانہ عشق بے چراغ ہوا داغ دہلوی

ادامه مطلب

وہ زمانہ نظر نہیں آتا – داغ دہلوی

وہ زمانہ نظر نہیں آتا کچھ ٹھکانہ نظر نہیں آتا دل نے اس بزم میں بٹھا تو دیا اٹھ کے جانا نظر نہیں آتا رہئے…

ادامه مطلب

مرتبہ دیکھنے والے کا ترے ایسا ہے

مرتبہ دیکھنے والے کا ترے ایسا ہے کہ بٹھاتے ہیں جسے اہل نظر آنکھوں پر داغ دہلوی

ادامه مطلب

کیا کیا ملائے خاک میں انسان چاند سے

کیا کیا ملائے خاک میں انسان چاند سے سچ پوچھیے اگر تو ز میں آسماں ہے اب داغ دہلوی

ادامه مطلب

کعبہ کی ہے ہوس کبھی کوئے بتاں کی ہے

کعبہ کی ہے ہوس کبھی کوئے بتاں کی ہے مجھ کو خبر نہیں مری مٹی کہاں کی ہے سن کے مرا فسانہ انہیں لطف آ…

ادامه مطلب

صاف کب امتحان لیتے ہیں

صاف کب امتحان لیتے ہیں وہ تو دم دے کے جان لیتے ہیں یوں ہے منظور خانہ ویرانی مول میرا مکان لیتے ہیں تم تغافل…

ادامه مطلب

رنج کی جب گفتگو ہونے لگی

رنج کی جب گفتگو ہونے لگی آپ سے تم تم سے تو ہونے لگی چاہیئے پیغام بر دونوں طرف لطف کیا جب دو بہ دو…

ادامه مطلب

خواب میں بھی نہ کسی شب وہ ستم گر آیا

خواب میں بھی نہ کسی شب وہ ستم گر آیا وعدہ ایسا کوئی جانے کہ مقرر آیا مجھ سے مے کش کو کہاں صبر، کہاں…

ادامه مطلب

تو نے کی غیر سے کل میری بُرائی کیوں کر

تو نے کی غیر سے کل میری بُرائی کیوں کر گر نہ تھی دل میں تو لب پر تیرے آئی کیوں کر نہ کہوں گا…

ادامه مطلب

بعد مدت کے یہ اے داغ سمجھ میں آیا

بعد مدت کے یہ اے داغ سمجھ میں آیا وہی دانا ہے کہا جس نے نہ مانا دل کا داغ دہلوی

ادامه مطلب

اچھی صورت پہ غضب ٹوٹ کے آنا دل کا – داغ دہلوی

اچھی صورت پہ غضب ٹوٹ کے آنا دل کا یاد آتا ہے ہمیں ہائے زمانہ دل کا تم بھی چوم لو، بے ساختہ پیار آ…

ادامه مطلب

وفا کریں گے نباہیں گے بات مانیں گے

وفا کریں گے نباہیں گے بات مانیں گے تمہیں بھی یاد ہے کچھ یہ کلام کس کا تھا داغ دہلوی

ادامه مطلب

محبت میں کرے کیا کچھ کسی سے ہو نہیں سکتا

محبت میں کرے کیا کچھ کسی سے ہو نہیں سکتا مرا مرنا بھی تو میری خوشی سے ہو نہیں سکتا کیا ہے وعدہ فردا انہوں…

ادامه مطلب

کیوں چراتے ہو دیکھ کر آنکھیں

کیوں چراتے ہو دیکھ کر آنکھیں کر چکیں میرے دل میں گھر آنکھیں چشمِ نرگس کو دیکھ لیں پھر ہم تم دکھا دو جو اک…

ادامه مطلب

فسانۂ شب غم ان کو اک کہانی تھی

فسانۂ شب غم ان کو اک کہانی تھی کچھ اعتبار کیا کچھ نہ اعتبار کیا داغ دہلوی

ادامه مطلب

سبق ایسا پڑھا دیا تو نے

سبق ایسا پڑھا دیا تو نے دل سے سب کچھ بھلا دیا تو نے ہم نکمے ہوئے زمانے کے کام ایسا سکھا دیا تو نے…

ادامه مطلب

دنیا میں آدمی کو مصیبت کہاں‌ نہیں

دنیا میں آدمی کو مصیبت کہاں‌ نہیں وہ کون سی زمیں ہے جہاں آسماں نہیں کس طرح جان دینے کے اقرار سے پھروں میری زبان…

ادامه مطلب

خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا (2)

خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا جھوٹی قسم سے آپ کا ایمان تو گیا داغ دہلوی

ادامه مطلب

تھم تھم کے وار کر کہ مرا درد مٹ نہ جائے

تھم تھم کے وار کر کہ مرا درد مٹ نہ جائے جب میں نہیں تو لذّت زخم جگر کہاں داغ دہلوی

ادامه مطلب

باقی جہاں میں قیس نہ فرہاد رہ گیا

باقی جہاں میں قیس نہ فرہاد رہ گیا افسانہ عاشقوں کا فقط یاد رہ گیا یہ سخت جاں تو قتل سے ناشاد رہ گیا خنجر…

ادامه مطلب

اچھی صورت پہ غضب ٹوٹ کے آنا دل کا

اچھی صورت پہ غضب ٹوٹ کے آنا دل کا یاد آتا ہے ہمیں ہائے زمانا دل کا تم بھی منہ چوم لو بے ساختہ پیار…

ادامه مطلب

وہی تو ہے شعلۂ تجلّی کہ دشت ایمن سے تنگ ہوکر

وہی تو ہے شعلۂ تجلّی کہ دشت ایمن سے تنگ ہوکر جب اس نے اپنی نمود چاہی کھلا حسینوں پہ رنگ ہوکر داغ دہلوی

ادامه مطلب

مجھ گنہگار کو جو بخش دیا

مجھ گنہگار کو جو بخش دیا تو جہنم کو کیا دیا تو نے داغ دہلوی

ادامه مطلب

کیا غرض ہے مری تقدیر کو مجھ سے پوچھے

کیا غرض ہے مری تقدیر کو مجھ سے پوچھے آبرو کا ہے طلب گار کہ رسوائی کا داغ دہلوی

ادامه مطلب

غیر کو منہ لگا کے دیکھ لیا

غیر کو منہ لگا کے دیکھ لیا جھوٹ سچ آزما کے دیکھ لیا ان کے گھر داغ جا کے دیکھ لیا دل کے کہنے میں…

ادامه مطلب

سبق ایسا پڑھا دیا تو نے – داغ دہلوی

سبق ایسا پڑھا دیا تو نے دل سے سب کچھ بھلا دیا تو نے لاکھ دینے کا ایک دینا ہے دلِ بے مُدّعا دیا تو…

ادامه مطلب

دیکھ کر جوبن ترا کس کس کو حیرانی ہوئی

دیکھ کر جوبن ترا کس کس کو حیرانی ہوئی اس جوانی پر جوانی آپ دیوانی ہوئی پردے پردے میں محبت دشمن جانی ہوئی یہ خدا…

ادامه مطلب

خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا – داغ دہلوی

خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا جھوٹی قسم سے آپ کا ایمان تو گیا دل لے کے مفت کہتے ہیں کہ کام…

ادامه مطلب

تمھارے خط میں نیا اک سلام کس کا تھا

تمھارے خط میں نیا اک سلام کس کا تھا نہ تھا رقیب تو آخر وہ نام کس کا تھا وہ قتل کر کے مجھے ہر…

ادامه مطلب

بات میری کبھی سنی ہی نہیں

بات میری کبھی سنی ہی نہیں جانتے وہ بری بھلی ہی نہیں دل لگی ان کی دل لگی ہی نہیں رنج بھی ہے فقط ہنسی…

ادامه مطلب

آتی ہے بات بات مجھے بار بار یاد

آتی ہے بات بات مجھے بار بار یاد کہتا ہوں دوڑ دوڑ کے قاصد سے راہ میں داغ دہلوی

ادامه مطلب

ہماری آنکھوں نے بھی تماشا عجب عجب انتخاب دیکھا

ہماری آنکھوں نے بھی تماشا عجب عجب انتخاب دیکھا برائی دیکھی، بھلائی دیکھی، عذاب دیکھا، ثواب دیکھا نہ دل ہی ٹھہرا، نہ آنکھ جھپکی، نہ…

ادامه مطلب

ملاتے ہو اسی کو خاک میں جو دل سے ملتا ہے

ملاتے ہو اسی کو خاک میں جو دل سے ملتا ہے مری جاں چاہنے والا بڑی مشکل سے ملتا ہے کہیں ہے عید کی شادی…

ادامه مطلب

گو نامہ بر سے خوش نہ ہوا پر ہزار شکر

گو نامہ بر سے خوش نہ ہوا پر ہزار شکر مجھ کو وہ میرے نام سے پہچان تو گیا داغ دہلوی

ادامه مطلب

غم سے کہیں نجات ملے چین پائیں ہم

غم سے کہیں نجات ملے چین پائیں ہم دل خون میں نہائے تو گنگا نہائیں ہم جنت میں جائیں ہم کہ جہنم میں جائیں ہم…

ادامه مطلب

ستم ہے کرنا جفا ہے کرنا نگاہ الفت کبھی نہ کرنا

ستم ہے کرنا جفا ہے کرنا نگاہ الفت کبھی نہ کرنا تمہیں قسم ہے ہمارے سر کی ہمارے حق میں‌ کمی نہ کرنا ہماری میت…

ادامه مطلب

دل میں ہے غم و رنج و الم، حرص و ہوا بند

دل میں ہے غم و رنج و الم، حرص و ہوا بند دنیا میں مخمس کا ہمارے نہ کھلا بند موقوف نہیں دام و قفس…

ادامه مطلب

حضرت دل آپ ہیں جس دھیان میں – داغ دہلوی

حضرت دل آپ ہیں جس دھیان میں مر گئے لاکھوں اسی ارمان میں گر فرشتہ وش ہوا کوئی تو کیا آدمیت چاہئے انسان میں جس…

ادامه مطلب

تمہارے خط میں نیا اک سلام کس کا تھا

تمہارے خط میں نیا اک سلام کس کا تھا نہ تھا رقیب تو آخر وہ نام کس کا تھا وہ قتل کر کے مجھے ہر…

ادامه مطلب

بات تک کرنی نہ آتی تھی تمہیں

بات تک کرنی نہ آتی تھی تمہیں یہ ہمارے سامنے کی بات ہے داغ دہلوی

ادامه مطلب